مائن ورکرز کو درپیش مسائل اور ان کے حل کے لیے تجاویز۔

مائن ورکرز کو درپیش مسائل اور ان کے حل کے لیے تجاویز۔

عنوان: مائن ورکرز کو درپیش مسائل اور ان کے حل کے لیے تجاویز۔

صحت و سلامتی کے حوالے سے مسائل: مائننگ سیکٹر میں نہایت پرخطر ہیں۔ سیفٹی قوانین پر عمل درآمد نہ ہونے کی وجہ سے حادثات ہوتے رہتے ہیں۔ ان حادثات میں کمی لانے کے لیے حفاظتی قوانین پر عملدرآمد نہایت ضروری ہے۔

تجویز : لیبر نمائندوں اور ٹریڈ یونینز کی طرف سے طویل عرصے سے یہ تجویز پیش کی جاتی رہی ہے کہ مائن معائنہ سہ فریقی بنیاد پر کی جائے جس میں انسپکٹر آف ماہنز کے ساتھ مائن ورکرز کا نمائندہ اور مائن اونر کا نمائندہ شامل ہو تاکہ معائنہ عملی طور پر کیا جا سکے اور عمل درآمد کو یقینی بنایا جا سکے۔پہلے سے رائج معائنہ سسٹم ناکام ہوچکا ہے

حادثات کی ایک اہم وجہ مائن ورکرز میں شعور و آگاہی کی کمی ہے ۔ مائن ورکرز کو کم از کم تین دن پلانٹ لیول پر جہاں وہ کام کرتے ہیں ٹریننگ دینے کے لیے منصوبہ بندی کی جائے۔ اس عمل کی نگرانی مائننگ بورڈ کے ذریعے کیا جائے۔ ہر چھ ماہ بعد ٹریننگ حاصل کرنے والے مائن ورکرز کے کوائف شائع کیا جائے تاکہ ٹریننگ کے عمل کو باقاعدہ موثر اور شفاف بنایا جا سکے۔
مائننگ سپرویزری اسٹاف، مایننگ سرداران کی تربیت کا بھی انتظام کیا جائے تاکہ وہ انڈر گراؤنڈ مائن کے علمی معاوضے اور نگرانی کے اصولوں سے واقف ہو سکے۔
مائننگ فیلڈ میں سیفٹی ہدایات مشتہر کرنے کے لیے بینرز اور پمفلٹ بہم پہنچانے اور چسپاں کرنے کا انتظام کیا جائے۔ تاکہ اس مہم سے مائن سیفٹی کے حوالے سے شہور و آگاہی پیدا کی جا سکے۔ مائننگ بورڈ کو مؤثر و فعال بنایا جائے۔

                          :مائن ورکرز کی رجسٹریشن
مائن ورکرز کی صحیح تعداد معلوم کرنے کے لیے ڈیٹا اکٹھا کیا جائے اس سلسلے میں سپریم کورٹ آف پاکستان کا ایک فیصلہ مورخہ 3-4-2018 کا بھی ہے جس میں دیگر امور کے علاؤہ ورکرز کا ڈیٹا اکٹھا کرنے کا حکم دے گیا ہے لیکن اس حکم پر عمل درآمد نہیں کیا گیا ہے لہذا مائن ورکرز کا ڈیٹا اکٹھا کیا جائے اور اس بنیاد پر ان کو ایی او بی آئی ، مائنز لیبر ویلفیئر آرگنائزیشن میں باقاعدہ رجسٹرڈ کروایا جائے تاکہ مائن ورکرز مختلف سہولیات حاصل کرسکیں۔

                                                : معاوضہ مرگ

ملک میں مختلف شرح سے کمپنسیشن ادا کیا جاتاہے سپریم  کورٹ کے فیصلے مورخہ 3-4-2018 کے مطابق یکساں شرح سے کم از کم کمپنسیشن پانچ لاکھ روپے کی ادائیگی ضروری ہے لہذا اس فیصلے پر عمل درآمد کیا جائے۔

:ویلفیئر کے اداروں میں مائن ورکرز کی نمائندگی ایل او کنونشن نمبر 144 کے تحت سہ فریقی مشاورت لازمی قرار دیا گیا ہے۔ لہذا سہ فریقی لیبر ویلفیئر کے اداروں میں مائن ورکرز کی نمائندگی ضروری ہے۔ لہذا ورکرز ویلفیئر بورڈ میں جہاں مائن ورکرز کی نمائندگی نہیں ہے مائن ورکرز کو نمایندگی دی جائے۔

                    :مائن ورکرز کو سہولیات کی فراہمی

مائن ورکرز تمام لیبر قوانین کے دائرہ کار میں آتے ہیں لہذا ان کو ورکرز ویلفیئر فنڈ، ورکرز ویلفیئر بورڈ، لیبر ویلفیئر آرگنائزیشن کے تحت تمام سہولیات اور مراعات دی جائیں۔ ورکرز ویلفیئر بورڈز میں زیرالتوا تمام ڈیت گرانٹ کیسز کو فوری طور پر نمٹایا جائے اور متوفی کے لواحقین کو ادائیگی کی جائے۔

Have your say